کشمیر ۔ سیاحوں کے لئے ایک اہم پیغام ۔

پاکستان سے آنے والے سیاحوں سے گزارش ہے کہ آزاد کشمیر میں قدرت کی لازوال عنایتوں کے باوجود بنیادی سہولیات کا شدید فقدان ہے.
اس لئے اپنے ٹوور آپریٹرز سے انتظامات کے متعلق تسلی کر لیا کریں. مقامی لوگ آپکی ہر ممکن مہمان نوازی کرئینگے تاہم ہمارے پاس اتنے وسائل نہیں ہیں
نیلم ویلی میں پچاس ہزار سیاحوں کی رات بسری کی گنجائش ہے
سرکاری اعداد کے مطابق گزشتہ روز ایک لاکھ چونسٹھ ہزار سیاح نیلم ویلی داخل ہوئے ہیں سہولیات نہ ہونے سے ایک بڑا ماحولیاتی بحران جنم لے سکتا ہے
گزشتہ برس بھی ایک حادثہ کئی معصوم جانیں نگل گیا تھا. پرل ویلی راولاکوٹ میں بھی تنگ سڑکوں پر ٹریفک کا شدید دباؤ ہے تولی پیر اور بنجونسہ جھیل پر بھی حالات بہت گھمبیر ہیں
تاہم پولیس کے آفیسران اور اہلکار مقامی رضا کاروں کی مدد سے سڑکوں پر ٹریفک کے بہاؤ کو رواں رکھنے کی ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں
پلیز آزاد کشمیر کے مقامی لوگ بھی تعاون کریں تاکہ ہمارے مہمان قدرت کے شاہکاروں سے لطف اندوز ہو سکیں
شکریہ