ہماری دلچسپ بیماری

ہم لوگ ایک عجیب سی بیماری کا شکار ہیں۔ اس بیماری کا نام تو شاید کسی کو معلوم نہ ہو لیکن اس کی علامات بہت آسانی سے دیکھیں جاسکتی ہیں۔

ان علامات میں سے چند ایک ملاحظہ فرمائیں

  • ہر شخص جلدی میں ہوگا ۔۔۔ لیکن پوچھا جائے کہ جلدی کس بات کی ہے تو جواب سن کر سوال کرنے والا پریشان ہوجائے گا۔ کیونکہ جلدی کا کوئی مقصد نہیں ہوگا۔
  • ہم لوگوں کو نوکری زبردست چاہیے،  جس میں تنخواہ بھی اچھی ہو، ٹور ٹپا بھی اچھا ہو۔۔۔ لیکن کام نہ کرنا پڑے
  • ہم لوگوں میں ایک زبردست پالیسی ہے جو شاید برصغیر ہی میں پائی جاتی ہے۔ ہر وقت دوسرے کی بات کو ٹھکرانا اور خود ہر بات پر مفکر بن جانا ۔۔۔۔ کبھی کبھی تو ڈاکٹر بن کر خود ہی مریض کا علاج بھی کر دینا ۔۔۔۔
  • ہمارے ڈگری ہولڈر کمال کے پڑھے لکھے لوگ ہیں، پورا پورا دن نوکری کی تلاش میں ہونگے، لیکن اگر کوئی پارٹ ٹائم یا کوئی کام مل جائے تو ڈگری ہولڈر کی بے عزتی ہوتی ہے۔۔۔۔ ایک زبردست آفس میں نوکری کی تلاش میں سال سال ضائع کر دیتے ہیں ۔۔۔۔
  • سوشل میڈیا پر ایک ٹرینڈ چلتا ہے ۔۔۔ اور پھر پورا پورا دن بیٹھے اس پر بحث کرتے ہیں ۔۔۔ بحث کسی نتیجے پر تو نہیں پہنچتی لیکن لوگ آپس میں ماں بہن کی گالیوں تک پہنچ جاتے ہیں
  • صبح سویرے نہاتے ہوئے ایک طبقہ سوچتا ہے کہ آج نواز شریف اور زرداری میں کونسے کیڑے نکالنے ہیں تو دوسرا طبقہ یہ سوچتا ہے کہ عمران خان کو کیسے غلط ثابت کرنا ہے
  • ہم لوگ نماز بھی پڑھ لیتے ہیں،  روزے بھی رکھ لیتے ہیں لیکن دوسرے انسان کی ہر قدم پر بے عزتی کرتے ہیں
  • صبح سویرے واٹس ایپ گروپس سے لیکر سارے سوشل میڈیا پر ایک دوسرے کو کافر اور قادیانی ثابت کرنے پر تل جاتے ہیں۔۔۔ اور پھر سمجھتے ہیں کہ ہم نے اسلام کے لئے بہت بڑا کام کیا یے
  • ہم نبی پاک کی آخری نبی ہونے کھ پہرے دار تو بنتے ہیں لیکن ان کی سنت اور سنت میں بتائے گئے رویہ اور غیر مسلموں سے بیان کئے گئے رویہ کو بھول جاتے ہیں
  • قانون خود توڑ کر دوسروں کو اسی قانون کہ پاسداری کرنے کی تلقین کرتے ہیں
  • چیف جسٹس جیسا پڑھا لکھا انسان، جو ایک لیول کے بعد اس درجہ تک پہنچا ہے، اگر وہ بھی ہماری سوچ اور پسند کے مطابق فیصلہ نہ دے تو میٹرک فیل بندہ اس کے فیصلہ پر بحث کر رہا ہوگا۔ اور اس میٹرک فیل بندے کی باتیں سننے کے لئے بی اے پاس بندوں کے گروہ پورا دھیان لگائے بیٹھے ہونگے

یہ چند ایک نشانیاں ہیں۔۔۔ کیا آپ میں بھی یہ نشانیاں پائی جاتی ہیں؟ اگر ہاں تو برائے مہربانی فورا اسکا علاج کروالیں ورنہ آپ کا اللہ ہی حافظ ہے

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

زمرے