fbpx

The Report Center – رپورٹ سنٹر

اسپین میں کورونا کے مریض اسپتالوں سے بھاگنے لگے انتظامیہ کی دوڑے لگ گئ

بارسیلونا: اسپین میں کورونا وائرس تقریباﹰ تین ہزار افراد کی جان لے چکا ہے۔ اب وہاں بہت سے مریض ہسپتالوں سے فرار ہونا شروع ہو گئے ہیں۔ ملکی پولیس کے سربراہ کے مطابق ان مفرور مریضوں نے حکام کو نئی ’غیر ضروری‘ مشکل میں ڈال دیا ہے۔اسپین کی نیشنل پولیس کے سربراہ خوزے آنجیل گونزالیس نے میڈرڈ میں ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ ملک کے کئی ہسپتالوں سے اب تک کورونا وائرس کی وجہ سے لگنے والی بیماری کوِوڈ انیس کے مریضوں کے فرار کے واقعات کی اطلاعات مل چکی ہیں۔انہوں نے کہا، ”ان مریضوں کے فرار کے واقعات نے ملکی سکیورٹی حکام کو ایک ایسے ‘بہت بڑے لیکن قطعی غیر ضروری‘ کام میں ڈال دیا ہے، جس کا مقصد ایسے ‘مفرور‘ مریضوں کو تلاش کر کے دوبارہ ہسپتالوں میں پہنچانا ہے۔خوزے آنجیل گونزالیس نے بتایا کہ منگل چوبیس مارچ کو بھی ملکی دارالحکومت میڈرڈ کے نواح میں لیگانیس اور مشرقی اسپین کے ساحلی علاقے کے قصبے بَینی دورم سے ایسے دو واقعات کی اطلاعات ملیں، جن میں نہ صرف کورونا وائرس کے مریض ہسپتالوں سے فرار ہو گئے بلکہ بہت سے ‘غیر ذمے دار شہری‘ سول کرفیو کے تحت گھروں سے نکلنے پر پابندی کی خلاف ورزیوں کے مرتکب بھی ہوئے۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

جواب دیں

زمرے
Close Menu