fbpx

The Report Center – رپورٹ سنٹر

لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر 472 افراد گرفتار ، 72 مقدمات درج

کورونا وائرس کے خطرے کی وجہ سے سندھ میں نافذ 15 روزہ لاک ڈاؤن کا آج پہلا دن تھا اور متعدد شہری لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرتے ہوئے غیر ضروری طور پر گھروں سے باہر گھومتے نظر آئے۔قانون کی خلاف ورزی پر آج سندھ بھر میں 472 افراد کو گرفتار اور 72 مقدمات درج کیے گئے۔ صرف کراچی میں 222 افراد گرفتار اور 33 مقدمات درج ہوئے ۔رپورٹ کے مطابق کراچی میں ساؤتھ زون میں 161 ،ایسٹ میں 60، ویسٹ میں ایک شخص کو گرفتار کیا گیا۔ اس کے علاوہ لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر میرپورخاص 6، سکھر 8، لاڑکانہ میں 236 افراد گرفتار ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق کراچی ساؤتھ زون میں 13، ایسٹ میں 19 اور ویسٹ میں 1مقدمہ درج کیاگیا جبکہ میرپور خاص میں 2، سکھر 1 اور لاڑکانہ میں 36 مقات درج ہوئے۔خیال رہے کہ کراچی سمیت سندھ بھر میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے سندھ حکومت نے 22 مارچ رات 12 بجے سے آئندہ 15 روز کے لیے صوبے بھر میں لاک ڈاؤن کردیا ہے۔

صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ نے صوبے بھر میں پبلک ٹرانسپورٹ پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔وزیرٹرانسپورٹ سندھ اویس شاہ نے اپنے بیان میں کہا کہ صوبے میں شہروں کے اندرچلنے والے پبلک ٹرانسپورٹ پر بھی پابندی عائد کردی ہے، بسیں اور آن لائن سروس پر بھی نہیں چل سکیں گی۔وزیر ٹرانسپورٹ کا کہنا تھا کہ کوئی شہری بیمار ہے یا ضروری کام ہے تو وہ ٹیکسی یا رکشہ استعمال کرے۔

کھانے کی ہوم ڈیلیوری اور پارسل پر بھی پابندی عائد
دوسری جانب کمشنر کراچی نے کھانے کی ہوم ڈیلیوری اور پارسل پر بھی پابندی عائد کردی ہےجب کہ کسی گاڑی میں 10 لیٹر سے زائد پیٹرول ڈلوانے کی اجازت نہیں ہوگی۔کمشنر کراچی کا کہنا ہےکہ کریانہ اسٹورز کو ہر ممکن سہولیات فراہم کی جائیں گی، دکاندار سندھ حکومت کی مقررہ پرائس لسٹ کے مطابق اشیاء خور و نوش فروخت کریں۔کمشنر کراچی کے مطابق کھانے کی ہوم ڈیلیوری اورپارسل پربھی پابندی عائد کردی گئی جب کہ تمام ریسٹورنٹس کےکچن بھی بند رہیں گے، گھر کے صرف ایک فرد کو سودا سلف خریدنے کی اجازت ہوگی۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

زمرے
Close Menu