اسلام آباد ہائی کورٹ نے پلاٹ الاٹمنٹس کیس میں وزیرِ اعظم عمران خان کے پرنسپل سیکریٹری اعظم خان کو دوبارہ نوٹس جاری

اسلام آباد (این این آئی) اسلام آباد ہائی کورٹ نے پلاٹ الاٹمنٹس کیس میں وزیرِ اعظم عمران خان کے پرنسپل سیکریٹری اعظم خان کو دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے ان سے جواب طلب کر لیا۔اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس محسن اختر کیانی نے آئوٹ آف ٹرن پلاٹس کی الاٹمنٹ کی درخواست پر سماعت کی۔ اعظم خان کی جانب سے کسی کے پیش نہ ہونے پر عدالت نے انہیں دوبارہ نوٹس جاری کر دئیے ہیں۔سیکریٹری پلاننگ ظفر حسن اور سابق سیکریٹری شفقت جلیل نے عدالت میں جواب جمع کرا دیا جبکہ عدالتِ عالیہ نے 7 بیورو کریٹس کو جواب جمع کرانے کی ہدایت کر دی۔جسٹس محسن اختر کیانی نے سی ڈی اے کے نمائندے سے سوال کیا کہ کیا سی ڈی اے نے یہ پلاٹ پیدا کیے؟سی ڈی اے کے وکیل نمائندے نے عدالت کو جواب دیا کہ پلاٹ پیدا نہیں کیے۔جسٹس محسن اختر کیانی نے ہدایت کی کہ سی ڈی اے کا جو بھی موقف ہے لکھ کر دے دیں۔اسلام آباد ہائی کورٹ نے سیکریٹری ایوی ایشن ڈویژن حسن نثار، سیکریٹری سیفران محمد اسلم، سیکریٹری پیٹرولیم، ممبر کسٹم جاوید غنی، ممبر لیگل ایف بی آر فضل یزدانی، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کے افسر اعجاز شاہ واسطی، فیڈرل گورنمنٹ ایمپلائز ہائوسنگ اتھارٹی، سی ڈی اے اور وزارتِ ہائوسنگ کو بھی جواب جمع کرانے کی ہدایت کر دی۔عدالتِ عالیہ نے سابق سیکریٹری ابو عاکف کی آئوٹ آف ٹرن پلاٹس کی الاٹمنٹ کی درخواست پر سی ڈی اے سے ریکارڈ طلب کر لیا۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

زمرے