بھارت، لاک ڈاون کے دوران باپ نے بیٹی کو بار بار زیادتی کا نشانہ بنا کر حاملہ کردیا

بھارت میں لاک ڈاؤن کے دوران باپ نے بیٹی سے بار بار زیادتی کر کے اسے حاملہ کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق یہ واقع بھارتی ریاست تمل ناڑو کے ایک ٹاؤن میں پیش آیا ہے جہاں ایک ظالم باپ نے اپنی ہی 14 سالہ بیٹی کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا ہے۔ اس بارے میں مقامی میڈیا کی رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ بچی کی طبیعت خراب ہونے کی صورت میں اسے ہپستال لے جایا گیا۔ ہسپتال جانے کے بعد ڈاکٹروں نے طبی معائنہ مکمل کرنے کے بعد بچی کی والدہ کو اس کے حاملہ ہونے کی اطلاع دی۔ والدہ نے جب اپنی بیٹی سے سارا معاملہ دریافت کیا تو ننھی 14 سالہ بچی نے اپنی والدہ کے سامنے انکشاف کیا کہ اس کا والد لاک ڈاؤن کے دوران اسے بار بار زیادتی کا نشانہ بناتا رہا ہے۔ متاثرہ بچی کی والدہ نے یہ واقع سننے کے بعد مقامی پولیس اسٹیشن میں مقدمہ درج کروا دیا جس کے بعد پولیس حرکت میں آ گئی اور ملزم کو کارروائی کرتے ہوئے گرفتار کر لیا۔ اس حوالے سے پولیس حکام نے بتایا ہے کہ ملزم کو گرفتار کر کے جیل میں بھیج دیا گیا ہے۔ خیال رہے کہ بھارت میں یہ اس نوعیت کا پہلا واقع نہیں ہے۔ اس سے پہلے بھی زیادتی کے واقعات سامنے آتے رہے ہیں۔ بیوی سے زیادتی ہو یا چھوٹے بچوں سے، یوں محسوس ہوتا ہے کہ بھارت ایسے واقعات کا گڑھ بن چکا ہے۔ آئے دن بھارت کی مختلف ریاستوں سے ایسے مختلف واقعات سامنے آتے رہتے ہیں جہاں کبھی ننھی بچیوں کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا جاتا ہے تو کہیں نوجوان ماڈل کو۔ ان واقعات کے بعد پولیس کی جانب سے مقدمہ درج کر دیا جاتا ہے اور کارروائی شروع کر دی جاتی ہے، ملزمان کی سزا کے حوالے سے کسی کو اطلاع نہیں دی جاتی۔ اس واقعے میں بھی پولیس نے مقدمہ درج کر کے ملزم کو گرفتار کر لیا ہے،اس کے انجام کے بارے میں کچھ ہو گا یا نہیں، اس حوالے سے کچھ کہا نہیں جا سکتا۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

زمرے