بھارتی ہائی کمیشن کا عملہ واپسی کا سامان باندھ لے

بھارتی ہائی کمیشن کا عملہ واپسی کا سامان باندھ لے، پاکستانی وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھارت کی جانب سے نئی دہلی میں بھارت کی جانب سے پاکستانی سفارت خانے کو نصف عملہ پاکستان بھیجنے کا حکم ملنے کے بعد بھارت کو دو ٹوک جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت بھی اپنے سفارت خانے کے عملے کا سامان باندھ لے۔ انہوں نے کہا ہے کہ نئی دہلی سے پاکستانی عملہ واپس آیا تو بھارتی عملہ بھی واپس جائے گا، وزیرخارجہ کا کہنا ہے کہ بھارت جیسا کرے گا ویسا بھرے گا، چین کے ہاتھوں پٹنے کے بعد بھارت منہ چھپاتا پھر رہا ہے، بھارت کے پاکستانی ہائی کمیشن عملے پر الزامات بےبنیاد ہیں، بھارت نے پاکستان پر جھوٹا الزام لگایا ہے، بھارت فالس فلیگ آپریشن کیلئے بہانے تلاش کر رہا ہے، بھارت کے لگائے گئے تمام الزامات غلط ہیں۔ خیال رہے کہ اس سے قبل مودی سرکار چین اور نیپال کی جانب سے منہ کی کھانے کے بعد اس قدر بوکھلاہٹ کا شکار ہے کہ اب بھارتی حکومت نے نئی دہلی میں پاکستانی سفارت خانے کو کہا ہے کہ سفارت خانہ اپنا نصف عملہ پاکستان واپس بھیج دے۔واضح رہے کہ گزشتہ دنوں بھارتی سفارت خانے کے دو افسران نے ایک پاکستانی کو اپنی گاڑی سے اسلام آباد میں ٹکر مار دی تھی جس کے بعد انہیں گرفتار کیا گیا تھا اور پھر سفارتی قوانین کے مطابق انہیں رہا کردیا گیا تھا۔ اس کے بعد بھارت نے دنوں افسران کو بھارت واپس بلایا تھا۔ اب بھارت نےپاکستانی سفارت خانے کو اپنا ادھا عملہ واپس بھیجنے کا حکم دیا ہے۔لیکن جواب میں بھارت کو بھی دوٹوک خبردار کردیا ہے کہ بھارت جیسا کرے گا ویسا بھرے گا۔ یہاں یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ اس وقت بھارت دنیا میں اکیلا ہوتا جارہا ہے اور شدید بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔ لداخ اور گلوان وادی میں چین نے بھارت کو ناکوں چنے چبوائے ہیں جبکہ اب بھی چین بھارت کی منت سماجت کے باوجود علاقے چھوڑنے پر راضی نہیں ہورہا اور دوسری جانب نیپال نے بھی بھارتی سرحد پر متنازع علاقوں کو نقشے میں ظاہر کردیا ہے جبکہ نیپال نے بھارتی ریاست بہار‘ پر بھی اپنی ملکیت کا دعویٰ کر دیا ہے۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

زمرے