جمہوری وطن پارٹی کے سربراہ نوابزادہ شاہ زین بگٹی نے حکومتی اتحاد سے علیحدہ کا اندیا دے دیا

کراچی (ویب ڈیسک) کوئٹہ میں جمہوری وطن پارٹی کی مرکزی کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں سربراہ نوابزادہ شاہ زین بگٹی نے وڈیولنک کے ذریعے شرکت کی۔ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ حکومت ایک ہفتے جمہوری وطن پارٹی سے کیے گئے معاہدے پر عملدرآمد کرے ورنہ پارٹی حکومتی اتحاد سے علیحدہ ہوجائیگی۔ اجلاس میں وفاق میں پی ٹی آئی حکومت کے سا تھ اتحاد برقرار رکھنے یانہ رکھنے پر تفصیلی مشاورت کی گئی ۔ اجلاس کے بعد کیے گئے اعلامیہ کے مطابق وفاقی حکومت کو ایک ہفتے کا وقت دینے کا فیصلہ کیا گیا۔اعلا میہ میں کہا گیا ہے کہ وفاقی حکومت جمہوری وطن پارٹی کے ساتھ کیے گئے معاہدے پر عملدرآمد کرے۔ اعلامیہ میں مزید یہ بھی کہا گیا ہے کہ وفاقی حکومت کے معا ہدے پر عمل نہ ہونے پر جے ڈبلیو پی وفاقی حکومت سے علیحدگی اختیا ر کریگی۔ عمران خان سے جمہوری وطن پارٹی کے سربراہ شاہ زین بگٹی کی ملاقات، پی ٹی آئی چیئرمین نے شاہ زین بگٹی کے تمام جائز مطالبات تسلیم کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ پاکستان تحریکِ انصاف کے چیئرمین عمران خان سے جمہوری وطن پارٹی کے سربراہ شاہ زین بگٹی نے ملاقات کی۔ ذرائع کے مطابق شاہ زین بگٹی نے اپنے مطالبات عمران خان کے سامنے رکھے۔ عمران خان نے شاہ زین بگٹی کے تمام جائز مطالبات تسلیم کرنے کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ بلوچ عوام کا احساس محرومی ختم کریں گے اور بلوچستان کو قومی دھارے میں لائیں گے۔ ملاقات کے بعد شاہ زین بگٹی نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ ملاقات میں بلوچستان کے معاملے پر بات ہوئی، عمران خان کو وزارتِ عظمیٰ کیلئے ووٹ دیں گے، عمران خان نے بلوچستان کے مسائل کے حل اور ڈیڑھ لاکھ بگٹی برادری کے لوگوں کی واپسی پر بات کی ہے۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

زمرے