حکومت نے پٹرول پر 6 روپے تک کا ریلیف دیا ہے،عمر ایوب

راتوں رات پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بڑے پیمانے پر اضافہ اور عوام کی شدید ردعمل پر وفاقی وزراء نے وضاحتیں دینا شروع کر دیں ،وزیراطلاعات و نشریات شبلی فراز ،معاون خصوصی شہباز گل کے بعد وزیر پٹرولیم عمر ایوب نے بھی ٹوئٹر پر بیان داغ دیا ۔انہوں نے کہا کہگزشتہ ماہ عالمی منڈی میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اچانک اضافہ ہوگیا ہے جبکہ روپے کی قدر بھی دوسے تین روپے کم ہوگئی ہے جس کی وجہ سے حکومت کو پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کرنا پڑا، ان کا کہنا تھا کہ پٹرول کی قیمت پر حکومت نے عوام کو تقریباً 6 روپے تک ریلیف دیا ہے ،اعدادوشمار کے مطابق پٹرول کی فی لٹر قیمت میں 31 روپے اضافہ بنتا تھا تاہم حکومت نے 25.58 فی لٹراضافہ کیا جبکہ ڈیزل کی قیمت میں اضافہ 24.31روپے فی لٹر بنتا تھا مگر حکومت نے 21.31 روپے فی لٹر کیا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ یکم جنوری کو پیٹرول کی قیمت 116.60 فی لٹر تھی جبکہ ڈیزل 127.26 روپے فی لٹر فروخت ہورہا تھا تاہم پیٹرول کی قیمت میں 42 روپے فی لٹر جبکہ ڈیزل کی قیمت میں 47 روپے فی لٹر تک کمی کی گئی لیکن اب پیٹرول کی قیمت میں اضافہ 25روپے فی لٹر کیا گیا جو کہ جنوری کی قیمت سے اب بھی 17روپے فی لٹر کم ہے۔ اسی طرح ڈیزل کی قیمت میں 21 روپے اضافہ کیا گیا جو کہ جنوری سے اب بھی 26روپے فی لٹر کم ہے۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

جواب دیں

زمرے