سرگودھا، رشتہ کا تنازع، مہنی کی رات دلہن قتل

سرگودھا میں رشتے کے تنازعے پر لڑکی کو مہندی کی رات قتل کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق سرگودھا میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے جہاں نو جوان لڑکی کو مہندی کی رات بے دردی سے قتل کر دیا گیا۔پولیس کے مطابق سرگودھا کے علاقے بابو محلہ میں گزشتہ رات لڑکی کی مہندی تھی اور لڑکیوں بیوٹی پارلرسے تیار ہو کر نکلی تو موٹر سائیکل پر سوار تین افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا۔ پولیس نے بتایا کہ تینوں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے تاہم تاحال کوئی ملزم گرفتار نہیں کیا جا سکا۔پولیس کے مطابق واقعہ کے روز لڑکی کی مہندی تھی اور آج شادی ہونا تھی۔ملزمان مقتولہ کے رشتہ دار ہیں جو اس کی شادی اپنی مرضی سے کرانا چاہتے تھے۔اور ایسا نہ ہونے پر لڑکی کو قتل کرنے کا فیصلہ کیا۔ سجی سنوری دلہن کو خون میں لت پت دیکھ کر گھر میں کہرام مچ گیا۔ رشتے کے تنازعوں پر ماضی میں اس طرح کے قتل و غارت کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں۔رواں سال سرگودھا میں ہی رشتے کے تنازعے پر بڑے بھائی نے کلہاڑیوں کے وار کر کے چھوٹے بھائی اور بھتیجی کو قتل کر دیا تھا۔بتایا گیا کہ سرگودھا کی نواحی تحصیل ساہیوال میںعمر حیات ولد سعید قوم پٹھان عمر 50 سال نے اپنے بیٹے علی رضا کے لئے چھوٹے بھائی خضر حیات ولد سعید سے اس کی بیٹی سدرہ بتول عمر 24 سال کا رشتہ مانگا ۔ بھتیجے کے بے روزگار ہونے کے سبب خضر حیات نے رشتہ دینے سے انکا ر کر دیا جس پر طیش میں آکر عمر حیات نے اپنے بھائی خضر حیات اور بھتیجی سدرہ بتول کو کلہاڑیوں کے وار کر دے قتل کر دیا ۔پولیس تھانہ ساہیوال نے خضر حیات کی بیوی کوثر مائی کی مدعیت میں مقدمہ درج کر لیا ہے۔اسی طرح ساہیوال میں گھریلو تنازعہ اور رشتہ کے تنازعہ پر دو لڑ کیوں اور ایک ادھیڑ عمر نے زہر کھا کر خود کشی کر لی تھی ۔کچی آبادی عارف والا روڈ کے محمد اکرم کی18سالہ بیٹی حمیرا نے والدین سے رشتہ کے تنازعہ پر جھگڑ کر گندم میں رکھنے والی زہریلی گو لیاں کھا لیں ۔تینوں کو بے ہوشی کی حالت میں ڈسٹر کٹ ھیڈ کوارٹر ہسپتال ساہیوال لایا گیا مگر تینوں نے دم توڑ دیا۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

زمرے