مبینہ جعلی ڈگری پر27 پاکستانی پائلٹس معطل

ویتنام(نیوز ڈیسک ) ویتنام نے مبینہ جعلی ڈگری پر27 پاکستانی پائلٹس کو معطل کردیا۔ تفصیلات کے مطابق ویتنام کی سول ایوی ایشن کے حکام نے مبینہ جعلی لائنسس اسکینڈل سامنے آنے کے بعد متعلقہ وزارت کی ہدایت پر پاکستان سے تعلق رکھنے والے 27 پائلٹس کو معطل کر دیا ہے۔ویتنام کی سول ایوی ایشن (سی اے اے وی) کے ڈائریکٹر ڈنھویٹ تھنگ کا کہنا تھا کہ یہ فیصلہ وزارت ٹرانسپورٹ کی ہدایت پر دو روز قبل کیا گیا تھا جو کہ جمعرات کو نافذ العمل ہوا ہے۔گراؤنڈ کیے جانے والوں میں وہ پائلٹس ہیں جنہیں پاکستان کی جانب سے لائسنس جاری کیے گئے تھے۔ پائلٹس گزشتہ کئی برس سے ویتنام میں کام کر رہے تھے۔سی اے اے وی کے ایگزیکٹو کے مطابق ہمیں پاکستانی سول ایوی ایشن حکام کی جانب سے جائزہ رپورٹ کا انتظار ہے جس میں طے ہوگا کہ آیا ان پائلٹس نے جعلی لائسنس حاصل کیا تھا یا نہیں۔انہوں نے کہا کہ جن پائلٹس کے پاس مصدقہ لائسنس ہوگا انہیں دوبارہ کام کرنے کی اجازت ہوگی۔ان کے لائسنس اور قابلیت قانونی ثابت ہوئی تو معطلی ختم کر دی جائے گی۔وزیر ٹرانسپورٹ نے پاکستان سے پائلٹس کے لائسنسوں پر نظرثانی کرنے کی درخواست کی ہے۔علاوہ ازیں پاکستان سے لائسنس حاصل کرنے والے غیر ملکی پائلٹس کو بھی معطل کرنے کی درخواست کی ہے۔انہوں نے انتظامیہ کو ہدایت کی ہے کہ ویتنام کی سول ایوی ایشن کے ساتھ کام کرنے والے تمام غیر ملکی پائلٹس کی قابلیت کا جائزہ لیا جائے۔انتظامیہ کو رپورٹ جمع کروانے کے لیے ایک ماہ کا وقت دیا گیا ہے۔سی اے اے وی کے ڈائریکٹر ڈنھویٹ تھنگ کا کہنا تھا کہ ابتدائی تحقیقات کے مطابق پاکستانی پائلٹس کے علاوہ کوئی غیر ملکی پائلٹ ایسا نہیں ہے جسے پاکستان کی جانب سے لائسنس جاری کیا گیا ہو۔خیال رہے کہ پاکستان حکام کی جانب سے گزشتہ روز کہا گیا تھا کہ 860 پاکستانی پائلٹس میں سے 260 کے پاس مشکوک لائسنس ہیں، تاہم ان کی چھان بین کی جارہی ہے۔ مشتبہ پائلٹس کے لائسنس کے معاملے پر وزارت ہوابازی کی جانب سے 262 پائلٹس کی فہرست جاری کی گئی تھی، جس میں پی آئی اے کے 141، ائیر بلیو کے 9 اور سرین ائیرکے 10 پائلٹس کے لائسنس مشتبہ قرار دیئے گئے ہیں۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

جواب دیں

زمرے