پوری دنیا کی توجہ کشمیر کی طرف تھی کہ اچانک ایک مولانا صاحب آزادی مارچ لے کر آگئے

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کشمیر کاز دنیا بھر میں اٹھ رہا تھا پوری دنیا کے میڈیا کی توجہ کشمیر کی طرف تھی کہ اچانک ایک مولانا صاحب آزادی مارچ لے کر آگئے آزادی مارچ نے کشمیر کو نقصان پہنچایا، ہم دوبارہ 5 اگست سے پہلے پوری دنیا میں مسئلہ کشمیر بھر پور طریقے سے اجا گر کریں گے، مودی عام آدمی نہیں نفسیاتی مریض ہے یہ آر ایس ایس کی پیداوار ہے،مودی مقبوضہ کشمیر میں نسل کشی کی طرف جارہاہے۔ وزیراعظم نے ان خیالات کا اظہار آزاد کشمیر کے ایک روزہ دورے پر مظفر آباد پہنچنے پر ایک تقریب سے اپنے خطاب میں کیا۔وزیر اعظم نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم پر شدید مذمت کی اور کہا کہ میں نے دنیا کو آر ایس ایس اور ان کے مظالم سے آگاہ کیا، یہ مقبوضہ کشمیر میں نسل کشی کی طرف جارہے ہیں، آر ایس ایس والے ہٹلر کی نازی پارٹی کو رول ماڈل سمجھتے ہیں مودی کی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی آر ایس ایس کی پیداوار ہے، مودی نے گجرات میں بھی مسلمانوں پر ظلم کیا،خواتین سے زیادتیاں کی گئیں، بھارت کی 8 لاکھ فوج 80 لاکھ کشمیریوں پر منصوبہ بندی سے ظلم کررہی ہے، بھارت اور آر ایس ایس کی انتہا پسند مودی کی حکومت مقبوضہ کشمیر میں ظلم کررہی ہے۔ظالم عموماً بزدل ہوتا ہے، ان لوگوں پر ظلم کرتا ہے جو بے بس ہوتے ہیں،مقبوضہ کشمیر کے تمام حالات تمام دنیا کے سامنے لے کر جاؤں گا، وزیراعظم نے کہا کہ 12 لاکھ کشمیریوں کو آزاد کشمیر میں صحت کارڈ ملے گا،جو ایل او سی پر مشکل زندگی گزار رہے ہیں ان کی مدد کرنے پر فخر ہے احساس پروگرام سے ایک لاکھ 38 ہزار خاندان کو پیسے ملیں گے۔عمران خان نے کہا کہ مودی ایک عام آدمی نہیں ہے یہ آر ایس ایس کی پیداوار ہے، جو مسلمانوں کے ساتھ ہو رہا ہے وہ ہی ہٹلر نے یہودیوں کے ساتھ کیا تھا، میں نے کہا تھا میں کشمیر کا سفیر بنوں گا، میں نے دنیا کو بتایا کہآر ایس ایس کون ہیں۔ ہندوستان میں اصل میں مسلمانوں کو ٹارگٹ کیا جاتا ہے، مودی اصل میں تباہی ہندوستان کی کر رہا ہے،یہ لوگ مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کو طاقت سے ڈرا رہے ہیں، ان کے ظلم سے کشمیر کی موومنٹ دوبارہ سے اوپر آجاتی ہے بھارت کے پڑھے لکھے عوام بھی سمجھ رہے ہیں کہ مودی تباہی کی طرف ملک کو لے کر جارہا ہے، بھارت خوف اور دہشت پھیلا کر ڈرانے کی کوشش کررہا ہے، بھارت اپنی اس کوشش سے کشمیریوں کو ڈرا نہیں سکتا، مقبوضہ کشمیر کے حالات تمام دنیا کے سامنے لے کر جاؤں گا۔وزیراعظم نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے مسئلے پر ہر ملک کے سربراہ کو آگاہ کرتا ہوں، ہم نے مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ میں اٹھایا، پوری دنیا کی میڈیا کی توجہ تھی، کشمیر کا کاز دنیا بھر میں اٹھ رہا تھا کہ ایک صاحب آزادی مارچ لے کر آگئے، آزادی مارچ نے کشمیرکاز کو نقصان پہنچایا، ہم دوبارہ دنیا بھر میں کشمیر کا مسئلہ اٹھائیں گے۔انہو ں نے مزید کہا کہ مشکل حالات میں بھی آزاد کشمیر کا بجٹ بڑھایا ہے کم نہیں کیا، آزاد کشمیر، فاٹا، بلوچستان اور گلگت بلتستان کا بجٹ بڑھائیں گے، 5 اگست تک ہم دوبارہ سے کشمیر کا مسئلہ اٹھائیں گے میں مقبوضہ کشمیر کے مسئلے سے ہر ملک کے سر براہ کو آگاہ کر تا ہو ں مسئلہ کشمیر کے متعلق ساری دنیا کو بتائیں گے کشمیر کے حالات تمام دنیا کے سامنے لے کر جاؤں گا۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

جواب دیں

زمرے