پٹرول کی قیمت میں اضافہ، حکومتی رکن اسمبلی کی اپنی ہی حکومت پر تنقید

حکومتی رکن قومی اسمبلی راجہ ریاض ایک بار پھر حکومت پر برس پڑے اور کہاہے کہ ایک رات میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں 25 روپے بڑھا دی گئی۔ہفتہ کو قومی اسمبلی میں اظہارخیال کرتے ہوئے انہوںنے کہاکہ ہم بھی حکومتی رکن ہیں،الیکشن جیت کر آئے ہیں،ہمیں ترقیاتی فنڈز نہیں مل رہے پتا نہیں فنڈز کس کو دئیے جا رہے،راجا ریاض کے احتجاج پر حکومتی بنچز ہکا بکا رہ گئے،راجا ریاض کے احتجاج کے دوران حکومتی اراکین بے بسی سے انہیں دیکھتے رہے۔پینل آف چیئر کے رکن راجہ ریاض کو چپ کرنے کی بجائے اپوزیشن رکن کو تقریری جاری رکھنے کا مشورہ دیا ۔دوسری جانب تحریک انصاف کے رہنما و رکن قومی اسمبلی علی محمد خان نے کہا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھانے کا موجودہ وقت درست نہیں تھا۔ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے علی محمد خان نے کہا کہ کابینہ اجلاس میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں پر گفتگو نہیں ہوئی تھی اگر کابینہ میں قیمتیں بڑھانے پر گفتگو کر لی جاتی تو اچھی بات ہوتی۔انہوں نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھانے کا موجودہ وقت درست نہیں تھا، بجٹ اجلاس ابھی جاری ہے پاس نہیں ہوا اس لیے تھوڑا انتظار کر لیا جاتا۔ علی محمد خان نے کہا کہ قیمتیں اچانک کیوں بڑھائی گئیں اس بارے میں علم نہیں، عالمی سطح پر قیمتیں بڑھ رہی ہیں شاید اس لیے یہاں بھی بڑھائی گئیں۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

جواب دیں

زمرے