پی آئی اے حکام کا ملازمین کی تنخواہوں میں کٹوتی کرنے کا فیصلہ۔

اس حوالے سے سی ای او پی آئی اے ایئرمارشل ارشد ملک نے ملازمین کے نام خط بھی لکھ دیا ہے جس میں انہیں آگاہ کیا گیا ہے کہ کورونا کے باعث مارچ 2020 سے پی آئی اے کا فضائی آپریشن صرف 10 فیصد رہ گیا ہے، افسران کی تنخواہوں میں 15 سے 25 فیصد تک کٹوتی کی جائے گی۔خط میں ملازمین کو بتایا گیا کہ حالات خراب ہونے کی صورت میں زیادہ تنخواہ لینے والے افسران کی تنخواہوں میں عارضی طور پر کمی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ سی ای او ارشد ملک نے اس کے علاوہ ملازمین کو بتایا ہے کہ اس وقت دنیا بھر کی ایئرلائنز کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جس کے بعد کئی ایئرلائنز نے اپنے ملازمین کو نوکریون سے نکال دیا ہے۔سی ای او کا کہنا تھا کہ پی آئی اے گزشتہ ایک دہائی سے خسارے میں چل رہی ہے، موجود حالات میں اس کا آپریشن نہ ہونے کے برابر ہے، اس لئے ہم نے زیادہ تنخواہ لینے والے افسران کی تنخواہ میں 15 سے 25 فیصد کی عارضی کٹوتی کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو کہ ہماری مجبوری تھی۔ بتایا گیا ہے کہ گروپ 1 سے 4 تک کے ملازمین کی تنخواہوں میں کسی قسم کی کٹوتی نہیں کی جائے گی۔ اس کے علاوہ ایک لاکھ سے 2 لاکھ تنخواہ لینے والے ملازمین کی تنخواہوں میں 10 فیصد، 2 لاکھ سے 5 لاکھ تک 15 فیصد جبکہ 5 لالھ سے زیادہ تنخواہ لینے والے ملازمین کی ماہانہ تنخواہ میں 25 فیصد کٹوتی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ خط میں مزید بتایا گیا ہے کہ سب سے پہلے تنخواہ میں کٹوتی پی آئی اے کے سربراہان اور سی ای او کی تنخواہ میں کی گئی ہے۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

زمرے