پاکستان میں اسلام کو نہ ٹک ٹاک سے خطرہ ہے نہ کتابوں سے

وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ پاکستان میں اسلام کو نہ ٹک ٹاک سے خطرہ ہے اور نہ ہی کتابوں سے ہے، ہمیں فرقہ ورانہ بنیادوں پر تقسیم اور شدت پسندی سے خطرہ ہے۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے ایک پیغام میں وفاقی وزیر نے کہا کہ اس وقت پارلیمان خصوصاً پنجاب میں ایسا ماحول بنا دیا گیا ہے کہ ہر ممبر روزانہ نئی تحریک لے کر آتا ہے، بتایا جاتا ہے اگر یہ نہ ہوا تو اسلام خطرے میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ خطرناک رویہ ہے اس سے ہم فرقہ ورانہ اور مذہبی شدت پسندی کے گرداب میں دھنستے جائیں گے۔ انہوں نے ایک اور پیغام میں یہ بھی لکھا کہ پاکستان میں اسلام کو نہ ٹک ٹاک سے خطرہ ہے نہ کتابوں سے، ہمیں فرقہ ورانہ بنیادوں پر تقسیم اور شدت پسندی سے خطرہ ہے۔ فواد چوہدری نے لکھا کہ محلوں میں مقید حضرات احتیاط کریں ایسی آگ کو ہوا نہ دیں کہ خود جل جائیں۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

جواب دیں

زمرے