سرکاری اسپتال میں 5 روپے کی رسید نہ بنوانے والا مریض اسپتال کے دروازے پر دم توڑ گیا

بھارت کے سرکاری اسپتال میں 5 روپے کی رسید نہ بنوانے والا مریض اسپتال کے دروازے پر دم توڑ گیا۔گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے سرکاری اسپتال میں مریض کی اہلیہ 5 روپے کی رسید بنوانے کے لیے کھلےپیسے لینے کے لیے ماری ماری پھرتی رہی اور شوہر نے تڑپ تڑپ کر جان دے دی۔ہلاک ہونے والے مریض کی شناخت سنیل راجک کے نام سے ہوئی، افسوسناک واقعہ بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے ضلع گونا میں پیش آیا۔اہلیہ کے مطابق شوہر کے مرنے کے بعد بھی کوئی مدد کو نہ آیا اور درخواستوں پر کان نہ دھرے، ایک گھنٹہ سے زیادہ کا وقت گزرنے کے بعد آخر کار ایک شخص نے ان کی مدد کی۔آرتی کے مطابق راجک 22 جولائی کو بیمار تھے اور اسپتال میں داخلے کے لیے رسید لینے گئی لیکن میرے پاس کھلے پیسے نہیں تھی اور میں کھلے پیسے لینے گئی اور راجک کو نیچے چھوڑ دیا تھا۔ان کا کہنا تھا کہ ’اسپتال کے کاؤنٹر پر گئی تو کہا گیا کہ پرچی کے پیسوں کی ادائیگی کرنی ہوگی، لوگ کہہ رہے تھے کہ وہ ابھی بھی سانس لے رہا ہے اسے بچایا جاسکتا ہے لیکن کوئی بھی مدد کرنے نہیں آیا۔ مرنے کے بعد بھی کسی نے نہ سنی اور ایک گھنٹے تک شوہر کی لاش کے پاس بیٹھ کر اپیل کرتی رہی۔ریاست کے سابق وزیراعلیٰ نے واقعے پر غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے ملوث اسپتال عملے کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ سوشل میڈیا پر بھی صارفین کی جانب سے غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے مودی سرکار کو آڑے ہاتھوں لیا جارہا ہے۔

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

جواب دیں

زمرے