عمر اکمل کو ریکیف مل گیا، سزا آدھی کردی گئی

قومی کرکٹ ٹیم کے مڈل آرڈر بیٹسمین عمر اکمل کو ریلیف دے دیا گیا، سزا تین سال سے کم کرکے ڈیڑھ سال کر دی گئی ہے۔ ڈسپلنری پینل نے عمر اکمل کو اینٹی کرپشن کوڈ کی خلاف ورزی پر تین سال پابندی کی سزا سنائی تھی جس کے بعد عمر اکمل نے ڈسپلنری پینل کے خلاف اپیل دائر کر کر رکھی تھی۔ 13 جولائی کی واحد سماعت میں محفوظ کیا گیا فیصلہ آج آزاد ایڈجیوڈیکٹر جسٹس ریٹائرڈ فقیر محمد کھوکھر نے سناتے ہوئے عمر اکمل کی سزا آدھی کردی۔ عمر اکمل کا کہنا ہے کہ ڈیڑھ سال کی سزا سے مطمئن نہیں، وکلاء سے مشاورت کے بعد پھراپیل کریں گے۔ عمر اکمل کا کہنا ہے کہ شکر ادا کرتا ہوں کہ سزا کم ہوئی، جو سزا رہ گئی ہے اس کو مزید کم کروانے کےلیے اپیل کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ مجھ سے پہلے بھی بہت سے کھلاڑیوں نے غلطیاں کی ہیں، لیکن اتنی سخت سزا نہیں دی گئی۔ وکیل عمر اکمل نے کہا کہ فیصلہ اگرچہ ہماری توقعات کے برعکس ہے لیکن ایک اچھا فیصلہ ہے۔ ‏واضح رہے کہ عمر اکمل کو پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) انٹی کرپشن کوڈ کی دو مختلف اوقات میں خلاف ورزی کرنے کی وجہ سے ڈسپلنری پینل کے چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ فضل میراں چوہان نے تین سال کی پابندی کا فیصلہ سنایا تھا.

اس خبر پر بحث کرنے کے لئے ابھی ہمارے پورٹل پر فری رجسٹر کریں۔

جواب دیں

زمرے