پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں منگل کو بھی تیزی کا رجحان

پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں منگل کو بھی تیزی کا رجحان جاری رہا اور کے ایس ای 100 انڈیکس مزید 266.33 پوائنٹس کے اضافے سے 41377.26 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیا جب کہ 65.56 فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے نتیجے میں مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت 42 ارب 75 کروڑ 82 لاکھ روپے بڑھ گئی اورحصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم بھی پیر کی نسبت 68.09 فیصد زائد رہی ۔ گزشتہ روز کاروبار کا آغاز منفی زون میں ہوا اور ابتدائی اوقات میں سرمایہ کاروں کی جانب سے محتاط طرز عمل کے باعث کے ایس ای 100 انڈیکس 41096 پوائنٹس کی نچلی سطح پر آگیا تاہم بعد ازاں منافع بخش کمپنیوں کے شیئرز خریداری کے باعث تیزی دیکھنے میں آئی اورنڈیکس 41401 پوائنٹس کی بلند سطح پرپہنچ گیا بعد میںپرافٹ ٹیکنگ رجحان کے سبب 41400 کی نفسیاتی حد برقرار نہ رہ سکی لیکن تیزی غالب آگئی اورکاروبار کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس 0.65 فیصد اضافے سے 41377.26 پوائنٹس کی سطح پربند ہوا اسی طرح کے ایس ای 30 انڈیکس 69.17 پوائنٹس کے اضافے سی 17776.37 پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 161.87 پوائنٹس کے اضافے سی 29122.86 پوائنٹس پر بند ہوا گزشتہ روز 424 کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا جن میں 278 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ 125 میں کمی اور 21 میں استحکام رہا۔تیزی کے باعث مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت بڑھ کر 76 کھرب 93 ارب 12 کروڑ 81 لاکھ روپے ہوگئی۔حصص کی قیمتوں میں اتار چڑھاو،ْ کے لحاظ سے یونی لیور فوڈز 787 روپے کے اضافے سی 11287 روپے اورکولگیٹ پامولو 202.49 روپی کے اضافی 3452.49 روپے ہوگئی جب کہ پاک ٹوبیکو 79 روپے کی کمی 1700 روپے اورآئس لینڈ ٹیکسٹائیل 54.58 روپے کی کمی سی 1014.42 روپے ہوگئی۔