پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں منگل کو اتار چڑھاوٗ کے بعد مندی کا رجحان غالب آگیا

پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں منگل کو اتار چڑھاوٗ کے بعد مندی کا رجحان غالب آگیا جس کے نتیجے میںکے ایس ای 100 انڈیکس 310.56 پوائنٹس کی کمی سے 42 ہزار کی نفسیاتی حد سے گرتے ہوئے 41985 پوائنٹس کی سطح پرآگیاجب کہ 67.98 فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی جس سے مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت میں 50 ارب 16 کروڑ 37 لاکھ روپے کیکمی ہوئی تاہم حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم پیرکی نسبت 18.08 فیصد کم رہا ۔گزشتہ روزکاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا اور سرمایہ کاروں کی جانب سے منافع بخش کمپنیوں کے شیئرز خریداری میں دلچسپی کے باعث تیزی رہی جس کے باعث ٹریڈنگ کے دوران کے ایس ای 100 انڈیکس 42529 پوائنٹس کی بلند سطح پر پہنچ گیاتاہم بعد ازاںمنافع حصول کی عرض سے سرمایہ کاروں نے شیئرز فروخت کرنے شروع کردئے جس کے باعث مندی چھاگئی اور کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس 310.56 پوائنٹس کی کمی سے 41985.19 پوائنٹس کی سطح پربند ہوا اسی طرح کے ایس ای 30 انڈیکس 159.08 پوائنٹس کی کمی سے 17839.64 پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 166.52 پوائنٹس کی کمی سے 29796.30 پوائنٹس پر بند ہوا۔ گزشتہ روز 431 کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا جن میں 120 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ 293میں کمی اور18میں استحکام رہا۔مندی کے باعث مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت بھی گھٹ کر 78 کھرب 59 ارب 72 کروڑ 64 لاکھ روپے ہوگئی۔ حصص کی قیمتوں میں اتار چڑھاوٗ کے لحاظ سے رفحان میظ 250 روپے کے اضافے سے 8550 روپے اورجوبلی انشورنس 32.18 روپے کے اضافے 473.58 روپے ہوگئی جب کہ کولگیٹ پامولو 145.43 روپے اورآئی لینڈ ٹیکسٹائیل 65.29 روپے کی کمی سے باالترتیب 3454.54 روپے اور 962.21 روپے ہوگئی۔