ایم کیو ایم پاکستان نے لندن میں پارٹی کی 7 جائیدادوں پر دعوی دائر کردیا

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم )پاکستان نے لندن میں پارٹی کی 10 ملین پانڈز سے زائد مالیت کی 7 جائیدادوں پر دعوی دائر کردیا۔لندن ہائی کورٹ میں یہ دعویٰ ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما اور وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی امین الحق کی ہدایت پر دائرکیاگیا ہے۔ درخواست میں بانی متحدہ اور ان کے بھائی اقبال حسین کے علاوہ طارق میر،محمدانور، افتخارحسین، قاسم رضا اور یوروپراپرٹی ڈویلپمنٹ کو فریق بنایا گیا ہے۔ جن 7 جائیدادوں کی ملکیت مانگی گئی ہے ان میں بانی متحدہ کی رہائش گاہ بھی شامل ہے اور ان سب کی کل مالیت 10 ملین پانڈز (2 ارب 16 کروڑ پاکستانی روپی)سے زائد ہے۔درخواست میں ایم کیو ایم پاکستان کے وکلا نے دعوی کیا ہے کہ برطانوی ٹرسٹ قوانین کے تحت ایم کیوایم پاکستان ہی ان جائیدادوں کی قانونی طور پر حق دار ہے۔درخواست میں جائیداد کی فروخت اور ان کے کرایہ وغیرہ کی رقم پر حکم امتناع جاری کرنے کی استدعا بھی کی گئی ہے۔