سینیٹر حاصل خان بزنجو مرحوم کی خالی ہونےوالی سینیٹ کی نشست پر انتخابات، کون خوش قسمت رہا؟

بلوچستان سے سینیٹ کی نشست پر ضمنی انتخاب میں بلوچستان عوامی پارٹی کے امیدوار خالد بزنجو 38 ووٹ لیکر کامیاب ہوگئے ، متحدہ اپوزیشن کے حاجی غوث اللہ کو 21 ووٹ ملے جبکہ ڈاکٹر منیر اور محمد علی کو کوئی ووٹ نہیں ملا، دو ووٹ مسترد ہوئے ۔ تفصیلات کے مطابق ہفتہ کو بلوچستان اسمبلی میں سینیٹر میر حاصل خان بزنجو مرحوم کی وفات کے بعد خالی ہونےوالی سینیٹ کی نشست پر ضمنی انتخاب کے لئے پولنگ پریزائیڈنگ آفیسر صوبائی الیکشن کمشنر محمد رازق کی سربراہی میں صبح نو سے شام چار بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہی جس کے دوران صوبائی اسمبلی کے 64 ارکان میں سے 61 ووٹ کاحق استعمال کیا پولنگ مکمل ہونے کے بعد تنائج کا اعلان کرتے ہوئے صوبائی الیکشن کمشنر و پریزائیڈنگ آفیسر محمد رزاق نے بتایا کہ کل 61ووٹ کاسٹ کئے گئے جن میں سے بلوچستان عوامی پارٹی کے میر خالد بزنجو38ووٹ لیکر کامیاب ہوئے ،جمعیت علماء اسلام کے حاجی غوث اللہ نے 21ووٹ حاصل کئے جبکہ آزاد امیدوار ڈاکٹر منیر بلوچ اور بلوچستان نیشنل پارٹی کے محمد علی کو کوئی ووٹ نہیں ملاانہوں نے بتایا کہ سینیٹ کے ضمنی انتخاب میں 2ووٹ مسترد ہوئے ۔دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ڈپٹی اسپیکر سردار بابرموسیٰ خیل کے چیمبر میں صوبائی پارلیمانی لیڈر سردار یار محمد رند کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں سینیٹ انتخاب کے حوالے سے مشاورت کی گئی بعدزاںبلوچستان عوامی پارٹی کے صوبائی وزراء میر سلیم کھوسہ ،مٹھا خان کاکڑ،رکن صوبائی اسمبلی عبدالرشید بلوچ اور امیدوار میر خالد بزنجو نے پی ٹی آئی کی پارلیمانی پارٹی سے ملاقات کی جس میں انہوں نے بی اے پی کے امیدوار کی حمایت کی درخواست کی جس پر پی ٹی آئی نے میر خالد بزنجو کی حمایت کا اعلان کیا ۔سینیٹ کےضمنی انتخاب کے موقع پر بلوچستان اسمبلی کے اندر اور اطراف میں سیکورٹی کے بھی سخت انتظامات کئے گئے جبکہ پرائیویٹ میڈیا کو انتخاب مکمل ہونے کے اسمبلی کے احاطے میں داخل ہونے کی اجازت نہیں دی گئی ۔