قصور، گھر میں گھس کر فائرنگ کرکے ایک ہی خاندان کے تین افراد قتل

ضلع قصور میں چار ملزمان نے گھر میں گھس کر فائرنگ کرکے ایک ہی خاندان کے تین افراد کو قتل کر دیا ہے. تھانہ اے ڈویژن کی حدود بھٹہ چوک میں پیش آنے والے اس اندوہناک واقعہ میں میاں، بیوی اور8 سالہ بیٹی جاں بحق جب کہ تین بچے شدید زخمی بھی ہوئے ہیں‘ملزمان کی فائرنگ سے عبدالحمید اور اس کی اہلیہ موقع پر جاں بحق ہو گئے جب کہ چار بچے شدید زخمی ہوئے جن میں سے ایک بچی ہسپتال میں چل بسی. ریسکیو ذرائع نے قتل ہونے والے میاں بیوی کی لاشیں ڈی ایچ کیو منتقل کر دی گئی ہیں جبکہ زخمی ہونے والوں بچوں کو جنرل ہسپتال لاہور منتقل کیا گیا ہے‘چند روز قبل وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے سیکٹر جی 13 تھانہ گولڑہ کی حدود میں 5 مسلح افراد نے شہری صفی اللہ کو گھر کے گیراج میں فائرنگ کر کے قتل کر دیا تھا. شہری جان بچانے کے لیے گھر کا گیٹ پھلانگ کر گیراج میں داخل ہوا لیکن اس کے باوجود قاتلوں نے پیچھا نہ چھوڑا اور گھر میں گھس کر شہری کو فائرنگ کر کے قتل کر دیا ملزمان واردات کے بعد باآسانی فرار ہو گئے پولیس کا اس بابت کہنا تھا کہ مقتول پشاور کا رہائشی تھا اور واقعہ ذاتی دشمنی کا شاخسانہ ہے تاہم واقعہ کا مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اور سی سی ٹی وی کیمروں کی مدد سے جلد ملزمان کو گرفتار کر لیا جائے گا. پولیس کے مطابق واقعے کی سی سی ٹی وی فوٹیج منظر عام پر آنے کے بعد گاڑی اور ملزمان کی شناخت ہو گئی جبکہ ملزمان کے فنگر پرنٹس بھی حاصل کر لیے گئے ہیں‘واضح رہے کہ خاندانی دشمنیوں اور امن وامان کی خراب ترین صورتحال کی وجہ سے لاہور سے محض 53کلو میٹر دور ضلع قصور سرفہرست رہتا ہے لاہور کی دو قریبی اضلاع قصور‘ شیخوپورہ اورگوجرانوالہ میں خاندانی دشمنیوں ‘قتل وغارت گری‘منشیات فروشی اور امن امان کی خراب صورتحال کی وجہ سے ان اضلاع میں ایک دو قتل معمول کی وارداتیں سمجھی جاتی ہیں

جواب دیں