حمزہ شہبازکی کوٹ لکھپت جیل سے اتفاق اسپتال منتقلی کی درخواست مسترد

مسلم لیگ (ن) کے نائب صدر حمزہ شہبازشریف کورونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں، اور ان کی مبینہ ناسازی طبع کے باعث مسلم لیگ (ن) کے ڈپٹی سیکرٹری عطا تارڈ نے ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ پنجاب کو ایک روز قبل خط لکھا تھا، جس میں حمزہ شہبازکی کوٹ لکھپت جیل سے اتفاق اسپتال منتقلی کی درخواست کی گئی تھی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ صوبائی حکومت نے حمزہ شہبازشریف کو اتفاق اسپتال منتقل کرنے کی درخواست مسترد کردی ہے، تاہم حمزہ شہباز کو متوقع طور پر لاہور کے کسی سرکاری اسپتال میں منتقل کیا جا سکتا ہے۔ گزشتہ روز مسلم لیگ (ن) کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل عطااللہ تارڑ نے ٹوئٹ میں بھی درخواست کی تھی کہ حمزہ شہباز کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے، انہیں کوٹ لکھپت جیل سے فوراً اسپتال منتقل کیا جائے اور جلد سے جلد طبی سہولیات فراہم کی جائیں۔ مسلم لیگ(ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے حمزہ شہباز کو علاج کے لئے فوری اسپتال منتقل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ حمزہ شہباز گزشتہ تین روز سے شدید بخار میں مبتلا ہیں، بگڑتی ہوئی صحت کو دیکھتے ہوئے انہیں کوٹ لکھپت جیل سے فوری اسپتال منتقل کیا جائے۔

جواب دیں