زیادتی کے ملزمان ہمارے قانون میں پولیس میں سقم کی وجہ سے چھوٹ جاتے ہیں

تحریک انصاف کی رہنما عندلیب عباس نے موٹر وے زیادتی واقعے کے حوالے سے کہا کہ زیادتی کے ملزمان ہمارے قانون میں پولیس میں سقم کی وجہ سے چھوٹ جاتے ہیں۔ ن لیگ کے میاں جاوید لطیف نے کہا کہ واقعے پر پولیس آفیسر کا یہ پیغام دے رہا ہے کہ رات میں پاکستان عورتوں کیلئے محفوظ نہیں ہے، پی پی کی پلوشہ خان نے کہا کہ موٹر وے واقعہ پر سوسائٹی میں تفصیلی بحث ہونی چاہیے۔ ان خیالات کا اظہار جیو نیوز کے پروگرام ’آپس کی بات‘‘ میں میزبان منیب فاروق سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ میزبان منیب فاروق نے سانحہ موٹر وے کے حوالے سے کہا کہ وزیراعظم کا کہنا ہے کہ ایسے مجرم کو نامرد کر دیا جائے جو یہ حرکت کرتا ہے ۔ نمائندہ جیو نیوز احمد فراز نے کہا یہ ایک واقعہ نہیں ہے دو ہیں جو یہ کہتا ہے یہ حادثہ موٹر وے پر نہیں ہوا اس سے اللہ ہی پوچھے۔ ان خاتون نے موٹر وے کے ٹول پلازہ پر تیس روپے دئیے ہیں اور جب انہوں نے ٹول پلازہ کراس کیا ہے اس سے تین کلو میٹر آگے جا کر گاڑی بند ہوگئی، عابد اور شفقت نے نا صرف ڈکیتی کی ہے زیادتی بھی کی ہے۔

جواب دیں