سانحہ بلدیہ فیکٹری میں ملزمان نے آگ لگا نے کے بعد وہیں چندہ بھی اکٹھا کیا

سانحہ بلدیہ فیکٹری میں ملزم رحمان بھولا اور ملزم زبیر چریا نے آگ لگا نے کے بعد وہیں چندہ بھی اکٹھا کیا ، ان خیالات کا اظہار تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود نے کیا ۔ نجی ٹی وی چینل کے ایک پروگرام میں انہوں نے کہا کہ سانحہ بلدیہ فیکٹر ی کے مجرمان رحمان بھولا اور زبیر چریا نے فیکٹری کے دروازوں کا تالا لگا کر آگ لگائی اور وہاں سے بھا گ گئے ، جس کے بعد انہوں نے فیکٹری مالکان پر سارا ملبہ ڈال دیا کہ انہوں نے نے انشورنس کا پیسہ لینے کے لیے ایسا کیا ، جب کہ یہ دونوں مجرم آگ لگانے کے بعد لوگوں کی مدد کے لیے وہاں چندا بھی اکٹھا کرتے رہے ، جبکہ قانون نافذ کرنے والوں نے مالکان سے بھتہ لیا ، مالکان ملک چھوڑ کر بھاگ گئے، ڈاکٹر شاہد مسعود نے بتایا کہ کئی عرصے بعد رینجرز کی جانب سے ایک شخص کو پکڑا گیا جس نے بتایا کہ اس نے آگ بھی لگائی ۔ تجزیہ کار نے انکشاف کیا کہ اس واقعے میں بڑی بڑی مذہبی شخصیات صلح کروانے کیلئے درمیان میں تھیں۔ یاد رہے کہ انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 8سال بعد سانحہ بلدیہ فیکٹری کا فیصلہ سنا دیا ، سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس میں ملزم رحمان بھولا اور ملزم زبیر چریا کو سزائے موت سنادی گئی ، حماد صدیقی کو اشتہاری قرار دے دیا گیا ، رؤف صدیقی بری ہوگئے۔