اپوزیشن نے گوجرانوالہ سٹیڈیم بھرنا تھا ، لیکن سٹیڈیم چھوڑ کر سٹیج لگایا گیا

وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ اپوزیشن نے گوجرانوالہ سٹیڈیم بھرنا تھا ، لیکن ان کی طرف سے آدھا سٹیڈیم چھوڑ کر سٹیج لگایا گیا ، جہاں پہلے ہی اس کی گنجائش 30 ہزار تھی جو اب 20 ہزار رہ گئی۔ اس حوالے سے تفصیلات کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں انہوں نے لکھا کہ اپوزیشن کی اتنی جماعتیں مل کر بھی ناکامی کے خوف کا شکار ہیں ، یہ عمران خان ہی تھا جس نے مینار پاکستان کا گراؤنڈ بھی بھر دیا تھا جب کہ ان سب سے مل کربھی اس کا آدھا نہیں ہونا۔ دوسری طرف پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما خرم دستگیر نے کہا ہے کہ گوجرانوالہ جلسے سے ان کی جماعت کے قائد نوازشریف کے خطاب کرنے کا قوی امکان ہے ۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کنٹینرز لگائے جا رہے ہیں اور راستے بند کیے جارہے ہیں ، حکومت کی طرف سے پہلے تو جلسے کی اجازت دینے میں تاخیر کی گئی پھر راستے بند کرنا شروع کر دیے ہیں ، جس کے لیے خار دار تاریں لگا کر چاروں اطراف کو بند کیا جارہا ہے ، تاہم اگر حکومت کی طرف سے رکاوٹ نہ ڈالی گئی تو میدان ضرور سجے گا ، اور جلسے کے دوران سماجی فاصلوں کا خیال رکھا جائے گا اور کرسیاں 3 فٹ کے فاصلے پر رکھی جائیں گی ، اسٹیڈیم میں جگہ کم ہوئی تو باہر بھی بیٹھنے کے لیے انتظامات کر رہے ہیں ، اور اس جلسے سے ہماری جماعت کے قائد سابق وزیراعظم نوازشریف کے خطاب کا بھی امکان ہے۔

جواب دیں