اسٹاک ایکس چینج میں بدھ کو مندی کا رجحان

پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں بدھ کو مندی کا رجحان غالب رہا جس کے نتیجے میں کے ایس ای 100 انڈیکس 138 پوائنٹس کی کمی سے 40514.67 پوائنٹس کی سطح پرآ گیاجب کہ 53.84 فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈکی گئی جس کے باعث سرمایہ کاروں کو 26 ارب 7 کروڑ 60 لاکھ روپے کا نقصان اٹھانا پڑا۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گزشتہ روز کاروبار کے آغاز سے ہی سرمایہ کاروں کی جانب سے حصص فروخت کا رجحان دیکھنے میں آیا جس کے باعث مندی چھاگئی اور دوران ٹریڈنگ کے ایس ای 100 انڈیکس 40344 پوائنٹس کی نچلی سطح پرآ گیا تاہم بعد ازاں 40400 اور 40500 کی نفسیاتی حدیں بحال ہوگئیں لیکن مندی کے اثرات زائل نہ ہوسکے اور کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس 138 پوائنٹس کی کمی سے 40514.67 پوائنٹس پر بند ہوا اسی طرح کے ایس ای 30 انڈیکس 57.79 پوائنٹس کی کمی سے 17056.49 پوائنٹس اور 99.44 پوائنٹس کی کمی سے کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس2 8390.57 پوائنٹس کی سطح پر گیا۔ گذشتہ روز مجموعی طور پر 377 کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے 149 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ 203 میں کمی اور 377 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔مندی کے باعث سرمائے کا مجموعی حجم 74 کھرب 70 ارب 48 کروڑ 97 لاکھ روپے سے گھٹ کر 74 کھرب 44 ارب 41 کروڑ 37 لاکھ روپے ہو گیا۔ حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم بھی منگل کی نسبت 2.95 فیصد کم رہا۔قیمتوں میں اتار چڑھاوٗ کےاعتبار سے آئی لینڈ ٹیکسٹائیل،رفحان میظ، کولگیٹ پامولو اور نیسلے پاکستان سرفہرست رہے جس میں آئی لینڈ ٹیکسٹائیل 90 روپے کے اضافے سے 1725 روپے اوررفحان میظ 80روپے کے اضافے سے 8255 روپے ہوگئی جب کہ کولگیٹ پامولو 50.92 روپے کی کمی سے 2799.08 روپے اور کولگیٹ 19.0 1روپے کی کمی سے 6469.99 روپے ہوگئی

جواب دیں