خوش آمدید جنوبی افریقہ کی کرکٹ ٹیم 13 سال 3 ماہ بعد پاکستان پہنچ گئی

پاکستان میں کرکٹ کی بحالی کیلئے ایک اور اہم سنگ میل عبور، جنوبی افریقہ کی ٹیم 13 سال 3 ماہ بعد پاکستان پہنچ گئی۔ 38 رکنی سکواڈ چارٹرڈ فلائٹ سے کراچی پہنچا۔ کونٹن ڈی کوک کی قیادت میں جنوبی افریقا کی مضبوط ٹیم پاکستان آئی ہے۔ مہمان ٹیم کوسخت سیکورٹی میں ائیر پورٹ سے ہوٹل لے جایا گیا۔ مہمان ٹیم قرنطینہ کے دوران کراچی جیمخانہ میں ٹریننگ کرے گی۔ جیمخانہ گراؤنڈ میں چار پریکٹس وکٹیں تیار کی گئی ہیں۔ کھلاڑی نجی ہوٹل میں قیام کریں گے۔ جہاں وہ بائیو سیکور ببل میں ہوٹل سے گراونڈ آجا سکیں گے۔ قرنطینہ مکمل کرنے کے بعد مہمان ٹیم نیشنل سٹیدیم کراچی میں پریکٹس کا آغاز کرے گی۔ادھر جنوبی افریقا کے خلاف 20 رکنی قومی ٹیسٹ سکواڈ کا اعلان کر دیا گیا، قیادت کے فرائض بابر اعظم سرانجام دیں گے۔ دیگر کھلاڑیوں میں عابدعلی، عمران بٹ، اظہر علی، شاہین آفریدی، فہیم اشرف، یاسر شاہ، آغا سلمان، سرفراز احمد، محمد رضوان اور فواد عالم شامل ہیں۔ عبداللہ شفیق، آغا سلمان، کامران غلام، نعمان خان، تابش خان، سعود شکیل، حسن علی، حارث روف اور ساجد خان بھی ٹیم کا حصہ ہیں۔یاد رہے جنوبی افریقہ اور پاکستان کے درمیان دو ٹیسٹ میچز اور تین ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میچز کھیلے جائیں گے۔ سیریز کا آغاز 26 جنوری سے نیشنل کرکٹ سٹیڈیمکراچی میں پہلے ٹیسٹ میچ سے ہوگا۔واضح رہے ٹیسٹ سیریز میں پروٹیز کا پلہ بھاری ہے۔ جنوبی افریقہ 26 مقابلوں میں 15 میچ جیتے، صرف چار میں پاکستان کو فتح ملی، 7 بے نتیجہ رہے۔ پروٹیز آخری بار اکتوبر 2007 میں پاکستان آئی، 4 شہروں میں 2 ٹیسٹ اور 5 ون ڈے میچ بھی کھیلے تھے۔