مسلمانوں پر سفری پابندیوں کا خاتمہ نئے امریکی صدر نے ٹرمپ کی کئی متنازع پالیسیاں ختم کردیں

امریکی صدر جو بائیڈن نے 78 سال کی عمر میں امریکا کے 46 ویں صدر کی حیثیت سے منصب سنبھالتے ہی کئی صدارتی حکم ناموں پر دستخط کردیئے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق وائٹ ہاوس کی پریس سیکریٹری جین ساکی نے میڈیا بریفنگ میں بتایا کہ وہپریس کی آزادی کی دل کی گہرائیوں سے قدرکرتی ہیں،امریکیوں کو سچ اور حقائق سے آگاہ رکھنا ہمارا مقصد ہے۔جین ساکی کے مطابق صدر بائیڈن نے پہلا حکم کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے جاری کیا ہے، جبکہ ٹرمپ انتظامیہ کی متازع پالیسیوں کو ختم کرنے کے لیے متعدد حکم نامے جاری کیے ہیں۔وائٹ ہاوس کی پریس سیکریٹری کاکہنا تھا کہ صدر نے سفارتکاری کے ذریعے ایران کے جوہری پروگرام اور دیگر خدشات دور کرنے کا کہا ہے، کیونکہ ہم چاہتے ہیں ایران دوبارہ جوہری معاہدے میں شامل ہو۔امریکی میڈیا کاکہنا تھا کہ امریکی صدر بائیڈن نے پہلے روز 17 ایگزیکٹو آرڈر پر دستخط کیے، زیادہ تر حکم نامے ٹرمپ کی متنازع پالیسیوں کوختم کرنے کے لیے ہیں۔نئے امریکی صدر بائیڈن نے تمام وفاقی املاک پر ماسک لازمی قرار دینے کے بل پر دستخط کیے، انہوں نے موسمیاتی تبدیلی سے متعلق پیرس معاہدے کی بحالی پر بھی دستخط کردیئے۔بائیڈن نے ٹرمپ انتظامیہ سے پہلی کی امریکی پالیساں بحال کرنے پر دستخط کیے،ٹرمپ انتظامیہ کے متنازع اقدامات واپس لینے کے ایگزیکٹو آرڈرپر بھی دستخط کردیئے۔امریکی صدر نے بعض مسلمان ممالک کے شہریوں پر امریکا میں امیگریشن پر پابندی ختم کرنے کے بل پردستخط کردیئے۔دوسری جانب خبرایجنسی نے دعوی کیا کہ سینیٹ سے منظوری کے بعد ایوریل ہینس ڈائریکٹر نیشنل انٹیلی جنس مقرر کیے جائیں گے۔