مولانا فضل الرحمان کوتو دعوت ہی نہ ملی لیکن مریم نواز ،بختاور بھٹو کی شادی میں کیوں شرکت نہیں کریں گی ؟ بڑی وجہ سامنے آگئی

پاکستان ڈیمو کریٹ موومنٹ میں اختلافات کی خبروں کی حقیقت سامنے آنا شروع ہو گئی ۔ مریم نواز کا بختار بھٹو کی شادی میں شرکت سے انکار۔ تفصیلات کے مطابق ن لیگ کے ترجمان محمد زبیر نے کہا ہے کہ مریم نواز شریف شادی میں شرکت نہیں کر سکیں گی ۔ انکا کہنا تھا کہ ذاتی مصروفیات کی وجہ سے وہ 30جنوری کو بختاور بھٹو کی شادی میںشرکت نہیں کریں گی ۔ قبل ازیں یہ خبر بھی سامنے آئی ہے جس کے مطابق پاکستان ڈیمو کریٹ موومنٹ اور جے یو آئی (ف)سربراہ مولانا فضل الرحمان کو سابق صدر پاکستان آصف علی زرداری کی بیٹی شادی پرمدعو نہ کیا گیا ۔ نجی ٹی وی رپورٹ کے مطابق صحافی نے مولانا فضل الرحمان سے صحافی نے سوالا پوچھا کہ آپ بختاور بھٹو زرداری کی شادی پر کب کراچی جارہے ہیں جس کے جواب میں مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ کونسی شادی مجھے تو آصف زرداری نے شادی پر آنے کی دعوت ہی نہیں دی ۔مولانا فضل الرحمان سے سوال کیا گیا کہ سنا ہے بڑے بڑے لوگ شادی میں شرکت کررہے ہیں، فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ مجھے بڑے بڑوں کا تو نہیں معلوم البتہ میں مجھے دعوت نہیں دی گئی ۔ پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا سابق صدر آصف علی زرداری سے ٹیلی فونک رابطہ ہوا جس میں دونوں رہنمائوں نے ملکی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال اور حکومت مخالف تحریک میں تیزی لانے پر اتفاق کیاگیا۔مولانا فضل الرحمن نے پیپلز پارٹی کی جانب سے عدم اعتماد کی تجویز پر اپنی پارٹی اور نواز شریف کے تحفظات سے آگاہ کیا ۔منگل کے روز پی ڈی ایم کے سربراہ مولا نا فضل الرحمان نے سابق صد ر آصف علی زرداری کو ٹیلی فون کیا جس میں دونوں رہنمائوں نے سربراہی اجلاس سے قبل حکومت مخالف تحریک تیز کرنے پر اتفاق کیا ۔ ٹیلی فونک رابطے میں 5فروری کو پی ڈی ایم جلسے سے متعلق اور سیاسی صورتحال پر بھی تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ۔واضح رہے کہ مولانا فضل الرحمن کا آصف زرداری سے رابطے کے چند گھنٹے قبل نواز شریف سے بھی رابطہ ہوا تھا جس میں نواز شریف نے عدم اعتماد کی تجویز کی سخت مخالفت کی اور شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے پیپلز پارٹی پر اظہار ناراضگی کیا اور مولانا کو آصف زرداری سے بات کرنے کو کہا۔ دوسری جانب سابق صدر آصف علی زرداری نےاپنی بڑی بیٹی بختاور بھٹو زرداری کو شادی کے موقع پر نئے گھر کا تحفہ دے دیا ۔نجی ٹی وی رپورٹ کےمطابق تحفہ میں دیا جانے والا نیا گھر بلاول ہاؤس کے احاطے میں تعمیر کیا گیا ہے۔اس کی علاوہ سابق صدر کی چھوٹی بیٹی آصفہ بھٹو زرداری کے لئے بھی نیا پورشن تعمیر کیا جارہا ہے جس کا کام آخری مراحل میںہے۔دوسری جانب سابق وزیرِاعظم شہید محترمہ بے نظیر بھٹو اور سابق صدر آصف زرداری کی صاحبزادی بختاوربھٹوزرداری کی جانب سے 31واں یومِ پیدائش منایاگیا۔اس مناسبت سے بختاور بھٹو کےچاہنے والے ان کی زندگی کے یادگار پہلوئوں کو سوشل میڈیا کی زینت بنا رہے ہیں اور بختاور بھٹو بھی من پسند ٹوئٹسکو لائیک کررہی ہیں۔بختاورکی جانب سے لائیک کئے گئے ایک ٹوئٹ میں ان کا غیر ملکی میڈیا کو دیئے گئے انٹرویو کا ایک کِلپ شامل ہے جس میں وہ والدہ بینظیر بھٹو کی وفات سے قبل پیشگی سالگرہ مبارک کے واقعے کا تذکرہ کررہی ہیں۔بختاور بھٹو نے کہاکہ والدہ نے شہادت پانے والے دن سے قبل مجھے فون کیا اور سالگرہ کی پیشگی مبارکباد دی۔جس پر میں نے انہیں کہا کہ آپ مجھے جنوری میں ہیسالگرہ والے دن مبارکباد دیجیے گا ایڈوانس میں دینے کا کیا مطلب ہے۔بختاور نے بتایا کہ والدہ کی شہادت کے بعد مجھے ان کی الماری سے ایک نکلس ملا، اور ساتھ یہ تحریر تھا کہ 18 ویں سالگرہ مبارک ہو۔انہوں نے بتایاکہ مجھے اس لمحے احساس ہوا کہ میری والدہ شہادت کے لیے تیار تھیں۔بختاور بھٹو زرداری25جنوری1990 کو کراچی میں پیدا ہوئیں، بختاور بھٹو زرداری نے انگریزی ادب میں ایم اے اور گریجویشن ایڈن برگ یونیورسٹی سے پاس کیا۔بختاور بھٹو زرداری کی شادی کی تقریبات کا آغاز بھی ہوگیا ہے،بختاور بھٹو کے محمود چوہدری سے نکاح کی تقریب 29 جنوری کو منعقد کی جائے گی جبکہ بارات کی تقریب 30 جنوری کو ہوگی۔ بختاورکی جانب سے لائیک کئے گئے ایک ٹوئٹ میں ان کا غیر ملکی میڈیا کو دیئے گئے انٹرویو کا ایک کِلپ شامل ہے جس میں وہ والدہ بینظیر بھٹو کی وفات سے قبل پیشگی سالگرہ مبارک کے واقعے کا تذکرہ کررہی ہیں۔بختاور بھٹو نے کہاکہ والدہ نے شہادت پانے والے دن سے قبل مجھے فون کیا اور سالگرہ کی پیشگی مبارکباد دی۔