پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں بدھ کو تیزی

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں بدھ کو بھی تیزی کا رجحان برقرار رہاجس کے نتیجے میںکے ایس ای 100انڈیکس مزید 170.75پوائنٹس کے اضافے سے46458.13پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیا جب کہ 53.20فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے نتیجے میں مارکیٹ کے سرمائے میں 20ارب69کروڑ70لاکھ روپے کاا ضافہ ریکارڈ کیا گیااور حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم بھی منگل کی نسبت 1.27فیصدزائد رہا۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں بدھ کو ٹریڈنگ کے آغاز سے ہی سرمایہ کاروں کی جانب سے نئی سرمایہ کاری میں زبردست جوش وخروش دیکھنے میں آیا جس کے باعث تیزی رہی اورکے ایس ای 100 انڈیکس 46698 پوائنٹس کی بلند سطح پر پہنچ گیا بعد ازاں 46500 اور 45600 کی نفسیاتی حد یں برقرار نہ رہ سکی لیکن تیزی کا رجحان غالب رہااورکاروبار کے اختتام پرکے ایس ای100انڈیکس170.75پوائنٹس کے اضافے سے 46458.13 پوائنٹس پر بند ہوا۔،اسی طرح کے ایس ای 30 انڈیکس 111.27 پوائنٹس کے اضافے سے 19370.27 پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 47.42پوائنٹس کے اضافے سے 32072.89 پوائنٹس کی سطح پرپہنچ گیا ۔گزشتہ روز مجموعی طور پر 421 کمپنیوں کا کاروربار ہوا جس میں سے 224 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ187 میں کمی اور 10کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا ۔تیزی کے باعث مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت83 کھرب 64ارب 23کروڑ 30لاکھ روپے سے بڑھ کر 83کھرب 84ارب 93 کروڑ روپے ہوگئی ۔قیمتوں میں اتار چڑھائو کے اعتبا ر سے سیپ ہائر ٹیکس کے حصص کی قیمت 76.43روپے کے اضافے سے 1100 روپے اورفلپ موریس 60.20 روپے کے اضافے سے 1508.20 روپے ہوگئی جب کہ کولگیٹ پامولو 120 روپے کی کمی سے 3055روپے اورگیٹرن انڈسٹریز کے حصص 45روپے کی کمی سے 555روپے ہوگئی