عمران خان کی حرکتیں بتاتی ہیں کہ وہ خود نہیں آئے

کراچی میں فیصل کریم کنڈی نے پی پی لیڈر شازیہ مری کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہم پارلیمنٹ میں رہ کر ان کا مقابلہ کریں گے، اس بات پر تمام اتحادی جماعتوں کو راضی کیا ہے۔ شازیہ مری کاکہنا تھا کہ ان سے سفارتی تعلقات نہیں بنتے ،قدیم سفارتی تعلقات پر ہمیں پانچ لاکھ کورونا ویکسین چین سے ایڈ میں ملی ہے۔ جو ان کے قول اور فعل ہیں وہ سب کے سامنے ہیں، پیٹرول کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے،یہ حکومت آئی ایم ایف کے سامنے لیٹ چکی ہے، جس سونامی کا یہ ذکر کرتے تھے یہ وہ سونامی ہے۔ پی پی رہنما شازیہ مری نے کہا کہ ہم اداروں کی عزت کرتے ہیں اور عزت کرانا چاہتے ہیں، وزیراعظم کو ٹی وی دیکھ کر پتہ چلتا ہے کہ ملک میں کیا ہو رہا ہے، عمران خان اپنی حرکتوں سے بتاتے ہیں کہ وہ خود نہیں آئے،یہ سلیکٹڈ اور لٹیرے ہیں اور کرائے کے ترجمانوں سے بیانات دلواتے ہیں۔ شازیہ مری نے کہا کہ یہ جب اپوزیشن میں تھے تو پروٹوکول حرام تھا اب حلال ہو گیا ؟ وزیراعظم غیر جمہوری سوچ کا مالک ہے۔ انہوں نے کہاکہ سندھ کے دعوے داروں نے مردم شماری پر مک مکاُکر لیایہ کھلی منافقت ہے،گیس کی قلت ہے انڈسٹریز کی گیس منقطع کی جا رہی ہے، انڈسٹریز بند ہو گئیں تو پھر غریب کا گھر کیسے چلے گا۔ پی پی رہنما نے کہا کہ یہ حکومت چار ووٹوں پر کھڑی ہے ان کو احتیاط کرنا ہو گی، ان کے اپنے لوگ ناراض ہیں اتحادی تو دور کی بات ہے، شازیہ مری کاکہنا تھا کہ پانچ سال تمہیں عجیب لگ رہے ہیں یہ ایک ڈکٹیٹر کی نشانی ہے،ہم اس بیان کو غیر جمہوری سمجھتے ہیں کہ ہر5سال بعد الیکشن کیوں ہوتے ہیں، ہم اس حکومت کے لئے میدان خالی نہیں چھوڑیں گے۔