شہباز شریف کی طبعیت ناساز، اسپتال منتقل کر دیا گیا

اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہباز شریف کی طبعیت اچانک ناساز ہو گئی۔تفصیلات کے مطابق جیل میں قید شہباز شریف کی طبعیت اچانک خراب ہو گئی۔شہباز شریف کو طبعیت ناساز ہونے پر انمول اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ شہباز شریف کو سخت سیکیورٹی میں اسپتال منتقل کیا گیا۔ذرائع مطابق شہباز شریف کا پی آئی ٹی سکین کیا جا رہا ہے۔ شہباز شریف کو بلڈ کینسر کا مرض لاحق ہے۔23نومبر 2018ء کو پیش کی گئی رپورٹ میں قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی حالیہ بلڈ رپورٹ میں کینسر کی علامات ظاہر ہونے کا انکشاف ہوا تھا۔جس کے بعد ڈاکٹروں نے شہباز شریف کو فوری سی ٹی سکین کرانے کا مشورہ دیا تھا ،ْشہباز شریف ماضی میں سرطان کے مرض سے صحت یاب ہوئے تھے۔ طبی ماہرین کے مطابق سرطان کے مریضوں میں مرض دوبارہ ظاہر ہونے کے امکانات موجود ہوتے ہیں۔ شہباز شریف کا معائنہ ان کے گلے میں تکلیف کی بنا پر کرایا گیا۔رپورٹ میں کروموگرینین اے کی کیفیت کی نشاندہی ہوئی تھی، ان کے خون میں ایڈینو کارسنائیڈ نوڈیول کی مقدار 688 پائی گئی، جس کی خون میں مقدار100 تک ہونی چاہئے، ڈاکٹروں نے شہبازشریف کا فوری سی ٹی سکین کرانے کا مشورہ دیا ہے۔ذرائع کے مطابق شہبازشریف کینسر کے مریض رہ چکے ہیں، اور وہ اس مرض سے صحت یاب بھی ہوگئے تھے۔ آج پھر شہباز شریف کی طبعیت ناساز ہوئی ہے۔شہباز شریف کا میڈیکل بورڈ 6 ارکان پر مشتمل ہے جو ان کی صحت کا جائزہ لے رہا ہے۔اب سے کچھ دیر قبل شہباز شریف کو سخت سیکیورٹی کے حصار میں کوٹ لکھپت جیل سے انمول اسپتال لایا گیا جہاں ڈاکٹرز ان کا چیک اپ کر رہے ہیں۔واضح رہے کہ شہباز شریف پر کرپشن کے الزمات عائد ہیں جس وجہ سے وہ گذشتہ کئی ماہ سے جیل میں قید ہیں۔شہباز شریف کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس کی تفتیش جاری ہے۔