پراؤڈ بوائز معاشرے کے لیے سنگین اور بڑھتا ہوا خطرہ قرار

کینیڈا کی حکومت نے بدھ تین فروری کو دائیں بازو کی انتہا پسند تنظیم ‘پراؤڈ بوائز’ کو معاشرے کے لیے ”سنگین اور بڑھتا ہوا خطرہ” قرار دیتے ہوئے اسے ایک دہشت گرد گروپ قرار دے دیا۔ گزشتہ چھ جنوری کو امریکی دارالحکومت واشنگٹن کے کپیٹل ہل پر ہونے والے حملے میں ‘پراؤڈ بوائز’ نامی گروپ کا اہم کردار تھا جس کے بعد سے ہی اس پر سخت نگاہ تھی اور اب کینیڈا نے اسے دہشت گردوں کا نیٹ ورک قرار دیدیا ہے۔ عوامی تحفظ سے متعلق وزیر بل بلیئر کا کہنا ہے کہ ملک کی خفیہ ایجنسیاں پہلے ہی سے اس گروپ کی سرگرمیوں کے حوالے سے کافی تشویش کا اظہار کرتی رہی تھیں اور اسی کے پیش نظر یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔ بل بلیئر نے اس حوالے سے ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا، ”سنگین تشدد کے حوالے سے نہ صرف ان کی بیان بازی بلکہ ان کی سرگرمیوں اور منصوبہ بندی پر بھی تشویش رہی ہے اور اسی وجہ سے ہم نے آج کی یہ کارروائی کی ہے ان کا کہنا تھا کہ یہ گروپ ‘بلیک لائیوز میٹر’ جیسی تحریکوں کے خلاف نہ صرف مسلسل مظاہرے کے لیے سامنے آتا رہا ہے بلکہ اپنے مخالف گروپوں کے خلاف تشدد برپا کرنے کی بھی کھلی دھمکیاں دیتا رہا ہے اس وجہ سے بھی اس پر پابندی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔