کشمیر سے متعلق وزیراعظم عمران خان نے وہی کہا جو ہمارے آئین میں ہے

کشمیر سے متعلق وزیراعظم عمران خان نے وہی کہا جو ہمارے آئین میں ہے ، لگتا ہے مخالفت کرنے والوں کو اردو میں ترجمہ کروا کر سمجھانا چاہئیے ، ان خیالات کا اظہار سینئر صحافی وتجزیہ کار ارشاد بھٹی نے کیا۔ تفصیلات کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری کیے گئے اپنے ایک ٹوئٹ میں انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نےگذشتہ روز کوٹلی میں یومِ یکجہتیِ کشمیر پر جو کہا اُس پر مسلم لیگ،پی پی کی تنقید پر حیران ہوں۔ سینئر تجزیہ کار نے کہا کہ الفاظ کا ہیرپھیر ہوسکتا ہے مگر وزیراعظم نے وہی کہا جو ہمارےآئین کی دفعہ 257 میں ہے ، لگتا ہے مخالفت کرنے والوں کو اردو میں ترجمہ کروا کر سمجھانا چاہئیے۔ واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے کہاتھا کہ پاکستان کشمیریوں کوآزاد رہنے یا پاکستان کا حصہ بننے کا حق دے گا، کشمیر یوں کو کہنا چاہتا ہوں جب آپ پاکستان کے حق میں فیصلہ کریں گے تو پاکستان بھی آپ کو مستقبل کا فیصلہ کرنے کا حق دے گا، مودی کوپھر کہتا ہوں،آپ جیت نہیں سکتے،5اگست کا اقدام واپس کے کر مذاکرات کرو ، انہوں نے یوم کشمیر کے موقع پر کوٹلی میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج یہاں آنے مقصد دنیا کو پیغام دینا ہے کہ دنیا نے کشمیرکے لوگوں سے 1948ء میں وعدہ کیا تھا، اقوام متحدہ کی قرارداد کے مطابق کشمیریوں کا حق دیا جائے گا، وہ اپنے مستقبل کا خود فیصلہ کرسکیں گے۔