سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حلیم عادل شیخ کے خلاف اقدام قتل اور اٖغوا کا مقدمہ درج

پولیس نے سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حلیم عادل شیخ اور ان کے 70 ساتھیوں کے خلاف سرکاری کام میں مداخلت ، پتھراؤ اور توڑ پھوڑ ، اقدام قتل ، اسلحہ کے زور پر اغوا مالی نقصان ، سرکاری ملازمین پر حملے سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا ہے۔ کراچی کے میمن گوٹھ پولیس اسٹیشن میں تحریک انصاف کے رہنما اور سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حلیم عادل شیخ سمیت ان کے 60 سے 70 ساتھیوں کے خلاف سرکاری کام میں مداخلت ، پتھراؤ اور توڑ پھوڑ ، اقدام قتل ، اسلحہ کے زور پر اغوا مالی نقصان ، سرکاری ملازمین پر حملے سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا ۔ پولیس نے ہفتے کی شب کورنگی کے رہائشی ٹھیکیدار محمد ایوب کی مدعیت میں حلیم عادل شیخ اور ان کے ساتھیوں کے خلاف جرم دفعات 147 ، 148 ، 149 ، 186 ، 353 ، 324 ، 417 ، 504 اور 506B کے تحت مقدمہ الزام نمبر 34/2021 درج کیا ہے۔